صلاح الدین کشمیریوں کاقائد،دہشت گردقرارنہیں دیاجاسکتا،بیرسٹرعبدالمجیدترمبو

سلائو (روزنامہ یوکے ٹائمز)18جولائی یوم شہداء کشمیر کی مناسبت سے کشمیر کنسرن یو کے کے زیر انتظام ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا جس میں پاکستان و کشمیری نژاد برطانوی سیاسی عمائدین’ مقبوضہ کشمیر سے تعلق رکھنے والے اور حریت کانفرنس کے رہنمائوں اور آزاد کشمیر کی رکن اسمبلی نسیمہ وانی میت سلائو کی میئر عشرت ناز شاہ’ بیرسٹر عبدالمجید ترمبو’ تحریک خواتین کشمیر کی سیکرٹری جنرل اور حریت کانفرنس کی مرکزی قائد محترمہ شمیم شال’ آزاد کشمیر حریت کانفرنس کے نمائندے اشتیاق میر’ حریت کانفرنس کے سابق کنونیئر سید یوسف نسیم ‘ سابق رکن اسمبلی آزاد کشمیر محمود ریاض’ سابق میئر راجہ محمد لطیف’ سابق میئر کونسلر چوہدری محمد شفیق سمیت بڑی تعداد نے شرکت کی۔ اس موقعہ پر شہدائے کشمیر کو خراج عقیدت پیش کیا گیا اور یہ تجدید عہد کیا گیا کہ کشمیریوں کی حق خود ارادیت کی تحریک کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا اور یہ موقف اختیار کیا گیا کہ بین الاقوامی قوانین اور اقوام متحدہ کے چارٹر کے مطابق کشمیریوں کی تحریک اور جدوجہد حق پر مبنی ہے ممتاز کشمیری لیڈر بیرسٹر عبدالمجید ترمبو نے کہا کہ انٹرنیشنل قوانین کے تحت کشمیری رہنما سید صلاح الدین پر دہشت گردی کا لیبل چسپاں نہیں کیا جاسکتا اور نیلسن مینڈیا کی طرح صلاح الدین بھی ایک حریت پسند ہے اور اپنے لوگوں کی آزادی کے لئے برسرپیکار ہے وہ کشمیریوں کا قائد ہے ہم سید صلاح الدین کی موومنٹ کو جائز سمجھتے ہیں ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ کے پارلیمنٹرین کو مسئلہ کشمیر اور کشمیریوں کے حق خود ارادیت کے لئے موثر کردار ادا کرنا چاہئے تقریب کے ابتداء میں پرویز نذیر احمد شال جو کشمیر کنسرن کے سرپرست اعلیٰ بھی ہیں نے مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال کے بارے میں کہا کہ بھارت آبادی کے تناسب کو تبدیل کرنے کے لئے اپنی فوجی طاقت کا بھرپور استعمال کررہا ہے اور انسانی حقوق کو پامال کررہا ہے سید یوسف نسیم نے کہا کہ آزاد کشمیر سے کوئی وفد اس وقت تک مکمل نہیں ہوتا جب تک اس میں حریت کے نمائندے شامل نہیں ہوں نسیمہ وانی نے کہا کہ برطانیہ میں مقیم کشمیری آزاد کشمیر کے لیڈروں سے بہتر مسئلہ کشمیر کو سمجھتے ہیں اور انہوں نے اپنے حالیہ دورے میں یہ بات سمجھی ہے کہ یہاں کشمیری اور پاکستانی مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لئے زیادہ تگ و دور کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وہ برطانیہ کے ان عظیم لوگوں کو سلام پیش کرتی ہیں جو مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف ہر وقت صدائے احتجاج بلند کرتے ہیں شمیم شال نے کہا کہ کشمیری خواتین اور بچے تحریک آزادی کشمیر میں ریڑھ کی ہڈی ہیں اور وہ دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر لازوال قربانیاں رقم کررہے ہیں سابق اوورسیز ایم ایل اے مسعود ریاض نے کہا کہ 22کشمیری شہداء نے ایک ایک کرکے اپنی جان کا نذرانہ دے کر آذان کی تکمیل کی تھی اور اسی سے سبق لیتے ہوئے آج بھی کشمیری اپنی جانوں کے نذرانے پیش کررہے ہیں۔ مسلم کانفرنس کے صدر چوہدری بشیر رٹوی نے کہا کہ ہمیں متحد ہو کر حق خود ارادیت کے حصول کے لئے کام کرنا ہوگا مسلم کانفرنس کے اوورسیز پبلسٹی بورڈ کے چیئرمین سردار امجد عباسی نے کہا کہ برطانیہ اور یورپ میں مقیم لوگ سوشل میڈیا کا بھرپور استعمال کرتے ہوئے کشمیر کے بارے میں مواد اور لٹریچر حتیٰ کہ شہداء کی تصویریں اپنے ارکان پارلیمنٹ کو بھجوائیں۔ تحریک انصاف کے رہنما اور بیرسٹر سلطان کے معتمد خاص چوہدری شعبان نے کہا کہ ہمبرگ میں نریندر مودی کی آمد پر بیرسٹر سلطان محمود کی قیادت میں ہونے والا کشمیر مظاہرہ کامیاب تھا لیکن زیادہ سے زیادہ لوگ اس میں شرکت کرتے تو مظاہرہ زیادہ موثر ثابت ہوتا۔ ہائی ویکمب سے سابق کونسلر راجہ ظفر اقبال نے کہا کہ زیادہ سے زیادہ کشمیر پر لٹریچر اور سیمینار منعقد کئے جائیں اور دوسری کمیونٹی کے افراد کی شرکت یقینی بنانے کے اقدامات کئے جائیںمسلم لیگ کے رہنما چوہدری اشتیاق نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) کی حکومت کشمیریوں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرنے کے لئے تیار ہے کوئی نیا ایکشن پلان متعارف کروایا جائے اس موقع پر سردار حیات’ مسلم کانفرنس کے چیف آرگنائزر راجہ اسحاق خان’ چوہدری خیرایت’ راجہ شروب خان’ کونسلر سرفراز کیانی’ راجہ امیر اﷲ’ ردار سوہن نگھ’ مسلم کانفرنس کے جنرل سیکرٹری شبیر ملک’ ربنواز سبحانی اور دیگر بڑی تعداد میں موجود تھے ان رہنمائوں نے کشمیر کی جدوجہد کو تیز کرنے اور متحد ہونے کی ضرورت پر زور دیا۔