لندن:90 منٹ میں تیزاب گردی کے 5 واقعات

لندن(روزنامہ یوکے ٹائمز) برطانیہ کے دارالحکومت لندن میں لوگوں کے چہروں پر تیزاب پھینکے کے 5 مختلف واقعات کے بعد برطانوی پولیس نے ایک نوعمر لڑکے کو گرفتار کرلیا۔برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق شمال مشرقی لندن کے علاقوں ہیکنی، اسٹوک نیونگٹن اور ازلنگٹن میں 90 منٹ کے اندر 5 مختلف لوگوں پر تیزاب پھینک دیا گیا۔متاثرین کو ہسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ایک شخص کی حالت تشویش ناک بتائی گئی۔میٹروپولیٹن پولیس کے مطابق مذکورہ نوعمر لڑکے کو مشرقی لندن کی پولیس نے گرفتار کیا۔دوسری جانب حکام نے حملہ آوروں کے حوالے سے کسی بھی قسم کی معلومات شیئر کرنے کی اپیل بھی کردی۔رپورٹس کے مطابق ایک موٹرسائیکل پر سوار 2 افراد نے موپڈ (moped) نامی سواری پر بیٹھے ایک 32 سالہ شخص پر تیزاب پھینکا اور پھر اس کی سواری لے کر فرار ہوگئے، جبکہ باقی افراد کے ساتھ بھی ایسا ہی کیا گیا۔ایک طرف جہاں کچھ لوگوں نے ان واقعات کو موپڈ سواری چوری کرنے کی واردات قرار دیا،وہیں کچھ لوگوں نے خیال ظاہر کیا کہ کوئی سواری چوری کرنے کے لیے لوگوں پر تیزاب کیوں پھینکے گا؟پولیس کے مطابق تیزاب پھینکنے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے ایک شخص کی حالت تشویش ناک بتائی گئی۔واضح رہے کہ تیزاب پھینکنے کے یہ واقعات ایک ایسے وقت میں سامنے آئے ہیں، جب چند دن قبل ایک ماڈل اور ان کی کزن پر تیزاب پھینکنے کے الزام میں ایک شخص پر فرد جرم عائد کی گئی تھی۔میٹ پولیس کے اعدادوشمار کے مطابق 2010 کے بعد سے اب تک لندن میں تیزاب سے حملوں کے 1800 سے زائد واقعات سامنے آچکے ہیں جبکہ صرف گذشتہ برس ان واقعات کی تعداد 458 تھی۔